Cloud Front

پی آئی اے کی پریمیئر سروس سفید ہاتھی بن گئی

ساڑھے تین ماہ کے دوران قومی ائیر لائن کو چارسو ملین روپے سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑگیا

کراچی: پی آئی اے کی پریمیئر سروس آغاز میں ہی گھاٹے کا سودا بن گئی ساڑھے تین ماہ کے دوران قومی ائیر لائن کو چارسو ملین روپے سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑگیا۔باکمال انتظامیہ کے باکمال فیصلے جلد ہی ناکارہ ثابت ہونے لگے چودہ اگست کو قومی ائیر لائن کی جانب سے اسلام آباد سے لندن کیلئے خصوصی پریمئیر سروس کا آغاز کیا گیا جس کے لئے مہنگے داموں کرائے پر ایئربس تھری تھری زیرو طیارہ استعمال کئے گئے

جبکہ سروس کو متعارف کرانے کے لئے ایئر بس طیاروں کو نئے لوگو کے ساتھ پینٹ بھی کیا گیا تھا۔اس سارے معاملے میں حیرت انگیز پہلو یہ ہے کہ پی آئی اے کو ائیر بس تھری تھری زیرو طیارے کا آٹھ ہزار ڈالرفی گھنٹہ ایک طیارے پرکرایہ ادا کرنا پڑ رہا ہے تاہم سری لنکا کے جانب سے بھی اب تک ایئر بس کا دوسرا طیارہ حوالے نہیں کیا گیا۔