Cloud Front
Amnesty International

ایمنسٹی انٹرنیشنل کی بھارت میں امریکی سیاح خاتون کیساتھ اجتماعی زیادتی کی مذمت

لندن ؍ممبئی ؍مظفرآباد : انسانی حقوق کی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے بھارت میں امریکی سیاح خاتون کے ساتھ اجتماعی ذیادتی کی شدید مذمت کرتے ہوئے بھارت کی جمہوریت کے منہ پر طمانچہ قرار دے دیا بھارت غیر ملکیوں کے لئے غیر محفوظ ملک قرار دیا گیا ہے جہاں غیر ملکیو ں کے لئے بھارت کی حکومت نے کوئی سکیورٹی پلان تیار نہیں کیا جبکہ بھارت کے اندر ایک مخصوص حکومتی سرپرست ٹولہ اجتماعی ذیادتیوں اور دہشتگردی کی کاروائیوں میں ملوث ہے ایمنسٹی انٹر نیشنل کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں ا س سے قبل درجنوں ایسے کیس ہیں جو غیر ملکی سیاحوں کی شکل میں بھارت کے شہر بمبئی ، پونا ،دہلی سمیت دیگر مقامات پر سیاح خاتونوں کے ساتھ اجتماعی ذیادتی کے واقعات روزمرہ کے معمول کے مطابق ہوگئے ہیں جبکہ امریکا سے تعلق رکھنے والی یہ دوسری خاتون ہے جس کے ساتھ ممبئی کے ایک فائیوسٹار ہوٹل کے گائیڈنے اپنے چار ساتھیوں کے ساتھ مل کر امریکی خاتون کے ساتھ اجتماعی ذیادتی کرتے رہے

جس پر امریکی خاتون دل برداشت ہوکر واپس امریکا چلی گئی جس پر انھوں نے بھارتی حکومت اور انسانی حقو ق کی تنظیم ایمنسٹی انٹر نیشنل کو باقاعدہ خط لکھ کر بھارت کی جمہوریت کا پول کھولا اس خط میں لکھا گیا ہے کہ بھارت میں غیر ملکیوں کے ساتھ بدترین سلوک کیا جارہا ہے اور جس کی بھارتی حکومتی یا ادارے کوئی سنوائی نہیں کررہے ایمنسٹی انٹرنیشنل نے بھارت کی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امریکی خاتون کے ساتھ ہونے والی ذیادتی کا فوری ازالہ کرتے ہوئے ملوث افراد کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمہ درج کریں ۔