Cloud Front
Corruption

ڈیڑھ ارب روپے کا نیشنل فرٹیلائزر سکینڈل

ملزم ابو بکر کا نام ای سی ایل میں ہونے کا انکشاف،احتساب عدالت نے ملزم کے مزید جسمانی ریمانڈ کی نیب کی استدعا مسترد کر دی

اسلام آباد: ڈیڑھ ارب روپے کا نیشنل فرٹیلائزر سکینڈل،ملزم ابو بکر کا نام ای سی ایل میں ہونے کا انکشاف،احتساب عدالت نے ملزم کے مزید جسمانی ریمانڈ کی نیب کی استدعا مسترد کر دی ، جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔ تفصیلات کے مطابق ڈیڑھ ارب روپے کا نیشنل فرٹیلائزر سکینڈل کے مرکزی ملزم ابو بکر کا نام ای سی ایل میں انکشاف ہو ا ہے ۔ سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے کی۔ احتساب عدالت نے نیب کی جانب سے ملزم کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کردی ہے اور ملزم کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا ہے۔

نیب نے استدعاکی کہ ملزم عزیز ابو بکر کا مزید جسمانی ریمانڈ منظور کیا جائے، مزید دستاویزات اور شواہد درکار ہیں،ملزم نے اہم فائلوں میں خورد برد کی اور جعلی دستخط بھی کیے ہیں۔جس پر ملزم کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مقدمہ تین سال لاہور میں بھی چلتا رہا، نیب نے جو انکوائری کرنی تھی کر لی ہے،مزید جسمانی ریمانڈ کی ضرورت نہیں، ملزم کا نام ای سی ایل میں بھی شامل ہے، بیرون ملک بھاگ کر تو نہیں جاسکتا۔عدالت نے نیب کی جانب سے جسمانی ریمانڈکی استدعا مسترد کرتے ہوئے ملزم کا جوڈیشل ریمانڈ منظورکر لیا ہے۔