Cloud Front

جے للیتا کے وفادار او پنیر سیلوم تمل ناڈو کے وزیر اعلیٰ بن گئے

او پنیر سیلوم کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انھوں نے اپنی چائے کی دکان سے فرصت نکال کر گریجویشن تک کی تعلیم حاصل کی

تامل ناڈو: انڈیا کی جنوبی ریاست تمل ناڈو کی وزیر اعلیٰ جے للیتا کے انتقال کے بعد ان کے وفادار کہے جانے والے سین آئر رہنما او پنیر سیلوم نے منگل کی صبح نئے وزیر اعلیٰ کے طور پر حلف لیا ہے۔وہ اس سے قبل ریاست کے وزیر خزانہ کا عہدہ سنبھال رہے تھے۔ انھوں نے ریاست کے 19 ویں وزیر اعلیٰ کے طور پر حلف لیا ہے۔جیسے ہی چینئی کے آپولو ہسپتال نے جے للیتا کی وفات کی تصدیق کی، ان کی پارٹی آل انڈیا انّا دڑاوڈ منّیتر کزگم (اے آئی اے ڈی ایم کے) کے رکن اسمبلی نے اتفاق رائے سے پنیر سیلوم کو اپنا نیا رہنما منتخب کر لیا۔چینئی سے صحافی عمران قریشی نے بتایا کہ انھیں یہ ذمہ داری سونپنے پر شاید ہی کسی کو حیرانی ہوئی ہو کیونکہ وہ پہلے بھی دو بار جے للیتا کے جیل جانے کی صورت میں ان کی ذمہ داریاں سنبھال چکے ہیں۔

انھوں نے یہ بھی بتایا کہ ابھی پارٹی کی صدارت کی ذمہ داری پر اتفاق نہیں ہوا ہے اور اس کے بارے میں بعد میں اعلان کیا جائے گا۔ تاہم بعض حلقوں میں اس بات پر اتفاق ہے کہ یہ ذمہ داری بھی پنیر سیلوم ہی نبھائیں گے۔پہلی بار پنیرسیلوم نے سنہ 2001 اور 2002 کے دوران اس وقت وزیر اعلیٰ کا عہدہ سنبھالا جب قانونی وجوہات پر جے للیتا اس عہدے کی ذمہ داری نہیں پوری سکتی تھیں اور دوسری بار سنہ 15۔2014 میں انھوں نے یہ ذمہ داری اٹھائی۔دراصل پنیرسیلوم جے للیتا کے سب سے زیادہ وفادار ساتھی مانے جاتے ہیں اور جے للیتا کے بیمار پڑنے کے بعد سے ہی وہ ان کی جگہ سرکاری ذمہ داری نبھا رہے تھے۔۔