Cloud Front
MQM

عزیز آباد میں ایم کیو ایم لندن اور قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں میں تصادم ،متعدد کارکن گرفتار

ایم کیو ایم لندن کے کارکنان کی جانب سے’ یادگار شہداء4 ‘ پر حاضری کی کوشش کی گئی، جسے پولیس کی جانب سے روکا گیا
کچھ لوگ سڑک پر چادر بچھا کر قرآن خوانی کر رہے تھے، کچھ خواتین آئیں اور یادگار شہداء4 پر قرآن پڑھنے کی اجازت طلب کی، انھیں اجازت دے دی گئی، بریگیڈئر نسیم احمد

کراچی: شہر قائد کے علاقے عزیزآباد میں لیاقت علی خان چوک (مکا چوک) کے قریب متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) لندن اور قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں کے درمیان تصادم کی صورتحال پیدا ہوگئی، جس کے بعد متعدد ایم کیو ایم کارکنان کو گرفتار کرلیا گیا۔ تفصیلات کے کراچی میں لیاقت علی خان چوک اور نائن زیرو کے اطراف ایم کیو ایم لندن کے کارکنان کی جانب سے’ یادگار شہداء4 ‘ پر حاضری کی کوشش کی گئی، جسے پولیس کی جانب سے روکا گیا۔اس موقع پر ایم کیو ایم لندن کے کارکنوں نے پولیس پر پتھراؤ کیا، جس پر پولیس کی جانب سے لاٹھی چارج کیا گیا اور بعدازاں متعدد کارکنوں کو گرفتار کرلیا گیا۔جس کے بعد کارکنوں نے عائشہ منزل سے ‘یادگارِ شہداء4 ‘ جانے والی سڑک پر دھرنا دے دیا، جس کے باعث ٹریفک کی روانی میں خلل پیدا ہوا۔

رینجرز کے سیکٹر کمانڈر بریگیڈئیر نسیم احمد نے بعدازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ‘کچھ لوگ یہاں سڑک پر چادر بچھا کر قرآن خوانی کر رہے تھے، ہمارے پاس کچھ خواتین آئیں اور یادگار شہداء4 پر قرآن پڑھنے کی اجازت طلب کی، جس کی انھیں اجازت دے دی گئی’۔انھوں نے بتایا کہ ‘جب وہ خواتین واپس گئیں تو وہاں موجود مرد کارکنوں نے سیاسی نعرے لگانے شروع کردیئے اور پارٹی پرچم لہرائے، جس پر پولیس نے ایکشن لیا اور کچھ لوگوں کو گرفتار بھی کیا گیا’۔گرفتار شدگان کی تعداد کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ جو لوگ یہاں انتشار پھیلا رہے تھے، ان کو گرفتار کیا گیا۔بریگیڈیئر نسیم احمد کا مزید کہنا تھا کہ ‘قرآن پاک کو سیاسی سرگرمیوں کے لیے استعمال کرنے کی ہمارا مذہب اجازت نہیں دیتا’۔

حیدرآباد میں بھی ایم کیو ایم لندن کے تقریباً 10 کارکنوں کو اْس وقت گرفتار کرلیا گیا، جب بڑی تعداد میں کارکنوں نے شہداء4 کی یاد میں منعقد کی گئی تقریب کے لیے پکا قلعہ گراؤنڈ کی طرف جانے کی کوشش کی۔اس موقع پر پولیس نے کارکنوں کو مشتعل کرنے کے لیے شیلنگ اور ہوائی فائرنگ بھی کی۔دوسری جانب پکا قلعہ گراؤنڈ میں ایم کیو ایم پاکستان کے کارکنوں نے شہداء4 کی یاد میں تقریب منعقد کی، اس موقع پر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری سیکیورٹی کے لیے موجود تھی۔