Cloud Front
PIA

قیمتی جانوں کے ضیاع کے بعد ہی کیوں اے ٹی آر گراؤنڈ کیے گئے ؟

ملتان سے کراچی جانے والی پی آئی اے کی پرواز 581 کے انجن میں اچانک آگ بھڑک اٹھی، ائیرپورٹ پر فائربریگیڈ عملے نے قابوپالیا، مسافر محفوظ رہے

ملتان:‌ ملتان سے کراچی جانے والی پی آئی اے کی پرواز پی کے581 کے انجن میں اچانک آگ بھڑک اٹھی،جس پر ائیرپورٹ پر موجود فائربریگیڈ عملے نے قابوپالیا،طیارے میں موجود تمام مسافر محفوظ رہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق ائیرپورٹ حکام کا کہنا ہے کہ ملتان سے کراچی جانے والی پی آئی اے کی پرواز581کے انجن میں اچانک آگ بھڑک اٹھی،کنٹرول ٹاور نے پائلٹ کو انجن میں آگ لگنے سے متعلق بروقت آگاہ کیا جس پر پائلٹ نے جہاز کو رن وے پر ہی روک لیا،ائیرپورٹ میں موجود فائربریگیڈ عملے نے کارروائی کرتے ہوئے آگ پر قابوپالیا،تمام مسافرمحفوظ رہے

جبکہ پی آئی اے کے مطابق اے ٹی آر میں آگ نہیں لگی ، اے ٹی آر کی مخدوش حالت کے بعد پی آئی اے کے تمام اے ٹی آر گراؤنڈ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ اتنی جانوں کے ضیاع کے بعد ہی یہ فیصلہ کیوں کیا گیا جبکہ یہ بہت پہلے ہوجانا چاہیے تھا