Cloud Front
Narendar Modi

پاکستانی فنکار ہندوستانی فنکاروں کا روزگار چھین لیتے ہیں !‌

پاک بھارت کشیدگی جب بھی عروج پر پہنچتی ہے سب سے زیادہ متاثر دونوں ممالک کی فلم انڈسٹری اور فنکار ہوتے ہیں
ہندو انتہا پسند تنظیمیں جن میں شیو سینا سر فہرست ہے سب سے پہلے ہندوستان میں پاکستانی فنکاروں کے خلاف مہم جوئی کرتی ہے

اس مرتبہ بھی جب کشیدگی کی آگ بھڑکی تو سب سے پہلے پاکستانی فنکاروں کو نشانہ بنایا گیا بہت سے انتہا پسند ہندو یہ سوچ رکھتے ہیں کہ پاکستانی فنکار ، فلم تکنیکی ماہر و دیگر بھارت میں‌آکر پیسہ کماتے ہیں جس سے ان کے ہندوستانی فنکاروں کا روز گار چھن جاتا ہے

ایک ہندوستانی اخبار کے اداریے میں بھی کچھ یہی لکھا گیا ہے جس میں انتہا پسند تنظیموں کی جانب سے تاثر دیا گیا کہ پاکستانی فنکار بھارت فنکاروں کا روز گار چھین لیتے ہیں وہ بھارت میں صرف پیسہ کمانے آتے ہیں اس کے ساتھ ہی انہوں نے بھارتی انتہا پسند ”وزیراعظم” نریندر مودی کو بھی اکسانے کی کوشش کی کہ وہ اس معاملے میں ڈونلڈ ٹرمپ بن جائیں اور پاکستانیوں کو بھارت میں‌کام نہ کرنے دیں

شاہ رخ خان اور ماہرہ خان کی آنے والی فلم ‘رئیس’ ریلیز سے قبل ہی تنازع کا شکار ہوگئی

حالیہ کشیدگی میں پاکستانی سٹار ماہرہ خان کو بھی متاثر کرنے کی کوشش کی گئی تھی انہوں نے فلم رئیس میں شاہ رخ خان کے ساتھ کلیدی کردار ادا کیا تھا لیکن شاہ رخ خان نے انتہا پسند جماعتوں کے سربراہوں سے ملاقات کی اور انہیں مطمئین کرنے کی کوشش کرتے رہے