Cloud Front
Imran Farooq

عمران فاروق قتل کیس : ملزمان پر فرد جرم عائد نہ ہو سکی

ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں پانچ جنوری تک توسیع ، ملزم معظم علی نے ایم کیو ایم سینیٹر بیرسٹرمحمد سیف کی خدمات حاصل کرلیں

اسلام آباد: ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس میں ملزمان پر فرد جرم عائد نہ ہو سکی، ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں پانچ جنوری تک توسیع کر دی گئی ، ملزم معظم علی نے ایم کیو ایم سینیٹر بیرسٹرمحمد سیف کی خدمات حاصل کرلیں۔اسلام آباد میں انسداد دہشتگردی کی عدالت کے جج کوثر عباس زیدی نے عمران فاروق قتل کیس کی سماعت کی، ملزم معظم علی کی طرف سے بیرسٹر محمد سیف نے وکالت نامہ جمع کرایا، انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزم معظم علی کو آنکھوں کے آپریشن کیلئے پمز اسپتال منتقل کیا جائے، عدالت نے ملزم معظم علی کی آنکھوں سے متعلق رپورٹ طلب کر لی، کیس میں نامزد ملزمان پر فرد جرم عائد نہ ہو سکی، عدالتی دائرہ کارسے متعلق درخواستوں پر بحث آئندہ سماعت پرہو گی،،، عدالت نے ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں پانچ جنوری تک توسیع کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی، بعدازاں بیرسٹرمحمد سیف کا کہنا تھا کہ کیس میں متحدہ کا کوئی تعلق نہیں بطور وکیل کیس لڑوں گا۔