Cloud Front
Stock Exchange

پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے 40فیصد حصص چینی سرمایہ کار کنسورشیم کو فروخت

پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے 40فیصد حصص چینی سرمایہ کار کنسورشیم کو 8ارب 96کروڑ روپے میں فروخت
کراچی: پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے 40فیصد حصص چینی سرمایہ کار کنسورشیم کو 8ارب 96کروڑ روپے میں فروخت کردیئے گئے ہیں۔ اسٹاک ایکس چینج کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق شہزاد چامڈیہ کی سربراہی میں قائم کی جانے والی ڈائیوسمنٹ کمیٹی کو 22دسمبر تک ملنے والی بولیاں جمعرات کو کھولی گئیں جس میں چینی کنسورشیم کی جانب سے ملنے والی 28روپے فی حصص کی سب سے زیادہ بولی کو کامیاب قرار دیا گیا۔

چینی کنسورشیم چین کی تین اسٹاک ایکس چینجز بشمول چائینا فنانشل فیوچر ایکس چینج کمپنی لمیٹڈ، شنگھائی اسٹاک ایکس چینج اور شینزن اسٹاک ایکس چینج کے ساتھ دو بڑے مالیاتی اداروں پاک چین انویسٹمنٹ کمپنی لمیٹڈ اور حبیب بینک لمیٹڈ پر مشتمل ہے۔ ڈاؤسٹمنٹ کمیٹی سیکیورٹیزاینڈ ایکس چینج کمیشن سے منظوری کے بعد کامیاب بولی دینے والے کنسورشیم کو قبولیت کا خط (لیٹر آف ایکسیپٹینس) جاری کرے گی۔ ڈائیوسٹمنٹ پالیسی کے تحت اسٹاک ایکس چینج میں عوامی شراکت بڑھانے 20فیصد حصص کی عوامی فروخت آئندہ چھ ماہ میں کی جائیگی اور ایکوزیشن کا عمل مکمل کرنے کے لیے مجموعی طور پر 16کروڑ حصص عوام کو فروخت کیے جائیں گے۔

نیلامی کا عمل مکمل ہونے کے بعد اسٹاک ایکس چینج کے بنیادی آپریشنز کا کنٹرول اسٹریٹجک انویسٹرزکو سونپ دیا جائے گا۔ پاکستان اسٹاک ایکس چین کی نیلامی میں ابتدائی طور پر 19سرمایہ کاروں نے دلچسپی کا اظہار کیا تھا جن میں چین، برطانیہ، امریکا کے اسٹریٹجک سرمایہ کاروں سمیت ایکویٹی فنڈز اور مقامی مالیاتی ادارے ایم سی بی بینک، نیشنل بینک، فیصل بینک اور ایچ بی ایل شامل تھے۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان اور سیکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن کی جانب سے مالیاتی اداروں پر 5فیصد سے زائد حصص کی آفر دینے پر پابندی عائد کی گئی تھی