Cloud Front
Imtiaz Ahmad

پاکستان کے پہلے ڈبل سنچری میکر وکٹ کیپر امتیاز احمد انتقال کر گئے

حکومت پاکستان نے 1966 میں انہیں پرائڈ آف پرفارمنس ایوارڈ دیا گیا
چئیرمین شہریار خان اور کرکٹ سے وابستہ دوسری شخصیات نے ان کے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے
لاہور: پاکستان کی جانب سے ٹیسٹ میں پہلی ڈبل سنچری اسکور کرنے والے سابق کپتان اور وکٹ کیپر بلے باز امتیاز احمد مختصر علالت کے بعد انتقال کر گئے۔پاکستان کی ابتدائی ٹیسٹ ٹیم کے ممبر، سابق کپتان اور وکٹ کیپر بلے باز امتیاز احمد اپنی 89 ویں برسی سے صرف 5 روز قبل مختصر علالت کے بعد انتقال کر گئے۔ سابق کپتان امتیاز احمد سانس کی تکلیف میں مبتلا تھے،

چند دن اسپتال میں زیرعلاج رہنے کے بعد وہ گھر واپس آگئے تھے تاہم ہفتے کی صبح وہ خالق حقیقی سے جاملے۔ امتیاز احمد کی نماز جنازہ آج لاہور میں ادا کی جائے گی۔پی سی بی کے چئیرمین شہریار خان اور کرکٹ سے وابستہ دوسری شخصیات نے ان کے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔امتیاز احمد نے 41 ٹیسٹ میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کی اور وکٹ کیپر کی حیثیت سے انہیں پہلی ڈبل سنچری بنانے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔ حکومت پاکستان نے 1966 میں انہیں پرائڈ آف پرفارمنس ایوارڈ دیا گیا۔