Cloud Front
Mushahid ullah

جاویدہاشمی نے جمہوریت کی خاطرمارشل لاء میں سیاست سے زیادہ جیلوں میں وقت گزارا ، مشاہد اللہ

عمران خان کا چہرہ جمہوری مجرم کے طورپرسامنے آیا،کمزورجمہوریت کی وجہ سے آئندہ بھی سیاست دانوں کوقربانیاں پیش کرناپڑیں گیں، رہنما مسلم لیگ (ن)

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے رہنماسینیٹرمشاہداللہ نے کہاہے کہ جاویدہاشمی نے جمہوریت کی خاطرمارشل لاء میں سیاست سے زیادہ جیلوں میں وقت گزارا ،عمران خان کا چہرہ جمہوری مجرم کے طورپرسامنے آیا،کمزورجمہوریت کی وجہ سے آئندہ بھی سیاست دانوں کوقربانیاں پیش کرناپڑیں گیں ۔ان خیالات کااظہارانہوں نے اتوارکے روزنجی ٹی وی کوانٹرویودیتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ جاویدہاشمی ایسے سیاستدان ہیں جنہوں نے جمہوریت کی خاطرمارشل لاء میں سیاست سے زیادہ وقت جیلوں میں گزارا،حکومت کے خلاف کچھ لوگوں نے عمران خان کواپنے ساتھ ملاکرسازش کی اورعمران کان کووزارت عظمیٰ کے خواب دکھائے ۔

عمران خان کوپتہ تھاکہ 2013ء کے الیکشن میں دھاندلی نہیں ہوئی ،زبان سے نکلنے والے الفاظ واپس نہیں آتے ۔جاویدہاشمی نے عمران خان پرجوالزامات عائدکئے ان سے سوفیصداتفاق کرتاہوں ۔جاویدہاشمی کے بیانات نے برطانوی ریڈیوکومیرے انٹرویوکی تصدیق ہوگئی ہے ۔انہوں نے کہاکہ عمران خان کاچہرہ جمہوریت کے مجرم کی حیثیت سے سامنے آیاکیونکہ 2014کے دھرنے کے بعدسے اب تک عمران خان کے دائیں بائیں کھڑی شخصیات اللہ ہی جانے کس کے ہاتھوں میں کھیل رہی ہیں ۔شاہ محمودقریشی کوبتاناچاہئے کہ دبئی میں ان کی کس سے ملاقاتیں ہوئیں ۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں سیاسی حکومت اورجمہوریت ابھی مضبوط نہیں ہوئی ،مجھے ایسالگتاہے کہ حکومت نے دباؤمیں آکرمجھے کابینہ سے ناچاہتے ہوئے نکالااورکمزورجمہوریت کی وجہ سے آئندہ بھی مجھ جیسے کئی سیاستدانوں کوقربانی دیناہوگی