Cloud Front
Rafique Tarrar File Photo

سابق صدر رفیق تارڑ کی پنشن میں اضافہ کی سمری تیار

سابق صدر رفیق تارڑ کی پنشن میں اضافہ کی سمری تیار ، منظوری کے لئے بہت جلد وزیر اعظم کو ارسال کر دی جائے گی

اسلام آباد : وزارت خزانہ نے سابق صدر جسٹس(ر) رفیق تارڑ کی پنشن میں 100 فیصد اضافہ کرنے کی سمری تیار کر لی ہے اور منظوری کے لئے بہت جلد وزیر اعظم کو ارسال کر دی جائے گی ۔ سابق صدر مملکت رفیق تارڑ جو 1999 ء کو سابق صدر مشرف نے فارغ کر دیا تھا نے نواز شریف حکومت سے اپنی پنشن میں اضافہ کا مطالبہ کیا تھا ۔ رفیق تارڑ نواز شریف کے والد محمد شریف کے قریبی دوست تھے ۔

والد کی سفارش پر نواز شریف نے انہیں 1997 میں صدر مملکت کے عہدہ پر فائز کیا تھا ۔ صدر مشرف کے اقتدار مین آنے کے بعد رفیق تارڑ سبکدوش ہو گئے تھے اور اس وقت سے لے کر آج تک وہ ماہانہ 48450 روپے پنشن وصول کر رہے ہیں تاہم وہ جج کی پنشن بھی وصول کر رہے ہیں ۔ موجودہ حکومت کو انہوں نے باور کرایا کہ گزشتہ 16 سالوں سے ان کی پنشن میں اضافہ نہیں کیا گیاہے اب تو کچھ میرا خیال کر لو ۔نواز شریف نے اب رفیق تارڑ کی پنشن میں اضافہ کی سمری منظور کریں گے اور ان کی پنشن میں 100 فیصد اضافہ ہوگا اور چیف جسٹس ریٹائرڈ کی پنشن سے بھی زیادہ وہ رقم وصول کریں گے ۔