Cloud Front
NAB

وفاقی محتسب اعلی کو مختلف سرکاری محکموں کے خلاف 97 ہزار 674 درخواستیں وصول

سب سے زیادہ درخواستین واپڈا ، سوئی گیس ، نادرا اور علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے خلاف آئی جبکہ 80 ہزار کے قریب اوورسیز پاکستانیوں کی درخواستوں پر انہیں ریلیف پہنچایا گیا ،رجسٹرار وفاقی محتسب

اسلام آباد : وفاقی محتسب کے سینئر مشیر رجسٹرار حافظ احسان احمد کھوکھر نے کہا ہے کہ 2016 میں وفاقی محتسب اعلی کے ادارے کو مختلف سرکاری محکموں کے خلاف 97 ہزار 674 درخواستیں وصول ہوئیں جن میں سے 94 ہزار 840 پر فیصلے کئے سب سے زیادہ درخواستین واپڈا ، سوئی گیس ، نادرا ، علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے خلاف آئی جبکہ 80 ہزار کے قریب اوورسیز پاکستانیوں کی درخواستوں پر انہیں ریلیف پہنچایا گیا ڈیڑھ لاکھ کے قریب اٹلی میں پاکستانیوں کا سب سے بڑا مسئلہ پاکستان ایمبیسی میں نکاح کا رجسٹرڈ نہ ہونا تھا جو تین دن میں حل کروایا گیا جبکہ دنیا بھر میں پاکستانی سفارتخانوں میں نادرا کو آن لائن کر دیا گیا ہے اور پاکستان کے 116 سفارتخانوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ہفتہ میں ایک دن بغیر وقت لئے پاکستانیوں کے مسائل سنے ۔

ایک اعلی سطحی میٹنگ کے دوران حافظ احسان احمد کھوکھر نے بتایا کہ گزشتہ تین سالوں کے دوران بجلی کی کمپنیوں کے خلاف ملنے والی ایک لاکھ 70 ہزار 546 شکایات نمٹائی ہیں شکایات پر کارروائی کرتے ہوئے زیادہ تر شہریوں کے حق میں فیصلے دیئے گئے جبکہ بہت کم درخواستین مسترد کی گئیں اور ان درخواستوں پر بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کی بدانتظامی اور زائد بلنگ کے بجلی کے نئے کنکشنز ایشوز اٹھائے گئے تھے نمٹائی گی درخواستوں میں سے 0.78 فیصد درخواست گزار اپیل میں گئے انہوں نے بتایا کہ وفاقی محتسب کی ہدایات پر وفاقی محتسب زیادہ تر درخواستیں 45 دنوں کے انڈر نمٹا رہا ہے

جس کا مقصد عوام کو ان کی دہلیز پر انصاف کی فراہمی ہے وفاقی محتسب کے سینئر ایڈوائزر اور اوورسیز پاکستانیز کمشنر حافظ احسن احمد کھوکھر نے بتایا کہ پہلی مرتبہ وفاقی محتسب کی ہدایات پر تمام وفاقی اداروں کے اندر کمپلینٹ آفیسر نامزد کر دیئے گئے ہیں اور اب شہری اپنی شکایات موصول کرنے والے افسر کے خلاف درخواست دے سکیں گیاور اگر یہ متعلقہ افسران 15 دن کے اندر اندر ان کا مسئلہ حل نہ کر سکیں تو شکایت کنندہ اپنی داد رسی کے لئے وفاقی محتسب سیکرٹریٹ سے رجوع کر سکے گا ۔