Cloud Front
Fawad Ch

دبئی منی ٹریل فراڈ اور جھوٹ ہے، مریم نواز منروا کمپنی کی مالک ہیں ،فواد چوہدری

اسحاق ڈار کے بیان حلفی میں منی لانڈرنگ کے ثبوت ہیں ، دبئی مل بیچنے سے حاصل ہونے والے 12 ملین کا کوئی ثبوت موجود نہیں ،میڈیا سے گفتگو

اسلام آباد: تحریک انصاف کے رہنمافواد چوہدری نے کہا ہے کہ مریم نواز شریف منروا کمپنی کی مالک ہیں اور وہی کمپنی دیگر کمپنیوں کو چلاتی ہےٍ اسحاق ڈار کے بیان حلفی میں منی لانڈرنگ کے ثبوت ہیں ، دبئی مل بیچنے سے حاصل ہونے والے 12 ملین کا کوئی ثبوت موجود نہیں ہے۔ پانامہ کیس کی سماعت میں وقفے کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے اسمبلی میں اپنی تقریر میں کہا تھا کہ دبئی، قطر، جدہ اور پھر لندن میں یہ معاملہ ختم ہوا لیکن اب تک کی سماعت میں دبئی کی سٹیل مل بیچنے سے حاصل 12 ملین درہم سے متعلق کوئی بھی ثبوت سامنے نہیں ہے اور اگر یہ آرگیومنٹ لے لیا جائے کہ پیسوں کا معاملہ میاں شریف کے ہاتھ میں تھا تو ان کے انتقال کے بعد یہ تمام پیسے فیملی کو ملنے تھے اور اس میں وزیراعظم کو بھی ان کا حصہ ملتا۔ اصل بات یہی ہے کہ دبئی میں بیچی گئی مل سے حاصل رقم کا منی ٹریل نہیں، یہ سب فراڈ ہے اور یہ معاملہ اس وقت ثابت ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جہاں تک مریم نواز شریف کا تعلق ہے تو دستاویزت کے مطابق منروا کمپنی کی مالک ہیں اور یہ کمپنی ہی تمام کمپنیاں چلاتی ہیں۔ اب دعوی یہ کیا جا رہا ہے کہ وہ خودمختار ہیں اور وزیراعظم کی پراپرٹیز کیساتھ ان کا کوئی تعلق نہیں، لیکن ٹیکس دستاویزات سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ وہ 2011سے اب تک 68 کروڑ روپے بطور تحفہ لے چکی ہیں اور نواز شریف حسین نواز سے 81 کروڑ روپے بطور تحفہ لے چکے ہیں۔سوال یہ ہے کہ حسین نواز نے نواز شریف کو جو 81 کروڑ روپے بطور تحفہ دئیے ہیں وہ کہاں سے آئے، ان کا ذریعہ کیا ہے۔ کیا ایف بی آر کو پوچھنا نہیں چاہئے کہ ان کا پیسہ کہاں سے آ رہا ہے اور اس کا ذریعہ کیا ہے، ہم سمجھتے ہیں کہ یہ پیسے ہنڈی کے ذریعے باہر گئے اورپھر تحفے کے ذریعے واپس نواز شریف کے پاس آئے۔ ہم سمجھتے ہیں کہ لندن کی پراپرٹیز ان پیسوں سے خریدی گئیں جن کا اعتراف اسحاق ڈار کے ایفی ڈیویٹ میں موجود ہے۔