Cloud Front
Maryam Aurangziab

مریم اورنگزیب کا عمران خان پر ہتک عزت کا دعویٰ دائر کرنے کا اعلان

تحریک انصاف پانامہ کیس کو بھولنے کی بات کررہے ہیں لیکن ہم بھولنے نہیں دیں گے،عمران نے 10 ماہ تک ملک میں انتشار پھیلایا اس کا جواب کون دیگا، ہم ان کو پتلی گلی سے بھاگنے نہیں دیں گے، وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات
جیسے جیسے کیس چل رہا ہے عمران خان کا چہرہ لٹکتا جارہا ہے، طلال چوہدری
عمران خود کنفیوز اور تنازعات کا شکار ہیں ، وہ جھوٹے الزامات لگانے کے ماہر ہیں، انوشہ رحمن

اسلام آباد: وزیرمملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ عمران خان نے 10 ماہ تک شور مچا کر ملک میں انتشار پھیلایا اور اب پاناما کو بھولنے کی بات کرتے ہیں لیکن ہم ان پر ہتک عزت کا دعویٰ کریں گے۔سپریم کورٹ کے باہرمیڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیرمملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا کہ سپریم کورٹ میں عمران خان کو ایک بار پھر شرمندہ ہونا پڑا، آج تحریک انصاف کی جانب سے ایک نیا مؤقف پیش کیا گیا اور کہا گیا کہ پاناما کیس کو بھول کر وزیراعظم نوازشریف کی تقریر کی بات کی جائے، اب آپ پاناما کو بھول جائیں لیکن ہم نہیں بھولیں گے،انہوں نے کہا کہ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ عمران خان نے 10 ماہ تک شور مچایا اور ملک میں انتشار پھیلایا اس کا جواب کون دے گا، پاناما کیس سے وزیراعظم کا کوئی تعلق نہیں، جھوٹی کہانی کو مزید جھوٹ بول کر پیش نہیں کیا جاسکتا عمران خان کو مایوسی ہوگی، ہم آپ کو پتلی گلی سے بھاگنے نہیں دیں گے،

اور آپ پر ہتک عزت کا دعویٰ کریں گے،مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ خان صاحب کو ہمیشہ عدالتوں کے باہر عدالت لگانے کا شوق ہوتا ہے۔ تحریک انصآف کو آج پھر شرمندہ ہونا پڑا۔ عمران خان کو جھوٹ بولنے کی عادت پڑ گئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ آج پی ٹی آئی نے ایک اور موقف دیا ہے۔ آج تحریک انصاف کا موقف تھا کہ پانامہ پیپرز کو ایک منٹ کے لئے بھول جائیں اور وزیراعظم کی پارلیمنٹ میں تقریر پر بات کریں۔طلال چوہدری کا کہنا تھا کہ میں عدالت میں ججز اور وکلا کے بجائے عمران خان کا چہرہ دیکھتا ہوں کیوں کہ ان کا چہرہ پاناما کیس کا تھرما میٹر ہے جیسے جیسے کیس چل رہا ہے عمران خان کا چہرہ لٹکتا جارہا ہے۔

طلال چوہدری کا کہنا تھا کہ آپ وزیراعظم کو عدالت میں بلانا چاہتے ہیں کسی کی خواہش پر وزیراعظم کو عدالت میں طلب نہیں کیا جاسکتا نوازشریف تو خود آئینی اور عوام عدالت میں پیش ہونے پر فخر کرتے ہیں، عدالت جب عمران خان سے ثبوت مانگتی ہے تو وہ اچھل کود شروع کردیتے ہیں اور بغیر ثبوت کے ہی پریس کانفرنس کرتے رہتے ہیں عدالت ثبوت تلاش نہیں کرتی بلکہ ثبوت پر فیصلہ کرتی ہے، عمران خان کے پاس ثبوت نہیں صرف جھوٹ کا پلندہ ہے۔ عدالت ثبوت مانگتی ہے ،آنیاں جانیاں نہیں دیکھتی کبھی ملتان ، کبھی کراچی، کبھی کہیں جلسے کرتے ہیں پہلے ثبوت دیں۔ خان صاحب سے جب ثبوت مانگیں تو وہ پریس کانفرنس کرتے ہیں۔ طلال چوہدری نے کہا ہے کہ جیسے جیسے پانامہ لیکس کا کیس آگے چل رہا ہے عمران خان کا چہرہ لٹک رہا ہے۔ پانامہ لیکس کا تھرمامیٹر عمران خان کا چہرہ ہے۔

انہوں نے مزید کہا ہے کہ عدالت عظمیٰ کسی کی انا کی خاطر وزیراعظم کو عدالت طلب نہیں کر سکتی۔ تحریک انصاف والے ہر روز نئی کہانی لے کر آتے ہیں۔ انہیں پتہ ہے جھوٹ سے شرمندگی ہوگی۔ مگر شرم آپ کو آتی نہیں ،انوشے رحمان کا کہنا تھا کہ عمران خان اور ان کی جماعت جھوٹے الزامات لگانے میں ماہر ہے لیکن اب عمران خان کے تمام الزامات ایک ایک کرکے زمین بوس ہوتے جارہے ہیں،اور عدالت میں ان کے وکیل بھی بوکھلاہٹ کا شکار نظر آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان عدلات میں گپ شپ کرنے آتے ہیں اورتامک ٹوٹیاں مارتے ہیں۔عمران خان خود کنفیوژ اور تنازعات کا شکار ہیں وہ اور ان کی جماعت جھوٹے الزامات لگاتے ہیں جن کا کوئی ثبوت ان کے پاس موجود نہیں۔۔