Cloud Front

معروف خاتون صحافی ، شاعرہ اور ادیبہ رخسانہ نور انتقال کرگئیں

معروف خاتون صحافی ، شاعرہ اور ادیبہ رخسانہ نور انتقال کرگئیں ،مرحومہ فلم ڈائریکٹر سید نور کی شریک حیات تھیں۔
ملک کی معروف ادیبہ ، شاعرہ اور خاتون صحافی رخسانہ نور آج لاہور میں انتقال کر گئیں ،وہ ایک عرصے سے بریسٹ کینسر جیسے موذی مرض میں مبتلا تھیں ، چند سال پہلے وہ علاج کے بعد تندرست ہو گئیں تھیں لیکن بعد ازاں اس مرض نے دوبارہ سر ابھارا جوجان لیوا ثابت ہوا ۔رخسانہ نور ملک کے معروف فلم ڈائرکٹر سید نور کی شریک حیات تھیں ،
رخسانہ نور کا تعلق سیالکوٹ سے تھا ، ابتدائی تعلیم کے حصول کے بعد وہ لاہور چلی آئیں اور پنجاب یونیورسٹی سے ایم اے جرنلزم کیا ، صحافت میں ماسٹرز کرنے کے بعد وہ رسائل اور اخبارات سے منسلک ہو گئیں ، اور ملک کے تمام بڑے اخبارات اور معروف رسائل میں بطور صحافی کام کیا ، دوران صحافت ان کی ملاقات اس وقت کے جواں سال فلم رائٹر سید نور سے ہوئی اور دونوں ر شتہ ازدواج میں بندھ گئے ، اس دوران سید نورفلم رائٹنگ کے ساتھ ساتھ فلم ڈائریکشن میں آ گئے اور بہت نام کمایا ،سید نور کی کامیابیوں میں رخسانہ نور کا حصہ بہت زیادہ ہے ،رخسانہ نور نے مختلف ادبی اور فلمی رسائل میں کہانیاں تحریر کیں اور اردو کے علاوہ پنجابی زبان میں بھی شاعری کی ، ان کی شاعری کا مجموعہ الہام بھی منظر عام پر آ چکا ہے ،رخسانہ نور نے کئی فلموں کے گیت بھی لکھے جن میں گھونگھٹ ، سنگم ،چوڑیاں ،مجاجن او ر مہندی والے ہتھ نمایاں ہیں ،
رخسا نہ نور آج صبح اپنے گھر پر تھیں کہ ان کی طبیعت خراب ہو گئی اور وہ مرض کی شدت سے جانبر نہ ہو سکیں اور قضائے الٰہی سے انتقال کر گئیں ۔انا للہ وانا الیہ راجعون