Cloud Front

ہندوستانی وزیر خارجہ کی ‘ایمازون’ کو دھمکی

ایمازون کینیڈا پر موجود بھارتی پرچم کے انداز میں بنے ہوئے ڈور میٹس کے ایک اشتہار نے بھارت میں نیا تنازع کھڑا دیا

نئی دہلی: ایمازون کینیڈا پر موجود بھارتی پرچم کے انداز میں بنے ہوئے ڈور میٹس کے ایک اشتہار نے بھارت میں نیا تنازع کھڑا دیا۔ایک ٹوئٹر صارف کی جانب سے آن لائن خرید و فروخت کی مشہور ویب سائٹ پر موجود ‘طویل مدت کیلئے قابل استعمال، مشین سے دھوئے جانے جبکہ گھر اور باہر استعمال کے لیے موجود ڈور میٹس’ پر بنے جھنڈوں کی نشاندہی کی، جس کے بعد بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج غصے میں آگئیں۔

سشما سوراج نے غصے کا اظہار سوشل میڈیا پر بھی کیا۔اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ کے ذریعے سشما سوراج نے آن لائن خرید و فروخت کے ویب سائٹ کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے لکھا کہ ایمازون اس اشتہار پر فی الفور ‘غیر مشروط معافی’ مانگے۔بھارتی وزیر خارجہ نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ اس ‘توہین آمیز’ پراڈکٹ کا اشتہار ویب سائٹ سے ہٹایا جائے۔ساتھ ہی انہوں نے کینیڈا میں تعینات بھارتی سفیر کو مخاطب کرکے یہ بھی لکھا کہ یہ پراڈکٹ ‘ناقابل برداشت’ ہے معاملے پر ایمازون کے اعلیٰ حکام سے رابطہ کیا جائے۔

ان ٹوئیٹس کے بعد بھی سشما سووراج کا غصہ کم نہ ہوا اور انہوں نے ایمازون کو دو ٹوک انداز میں واضح کردیا کہ اگر ڈور میٹس کے یہ اشتہارات نہ ہٹائے گئے تو آئندہ ایمازون کے حکام کو مزید ویزے جاری نہیں کیے جائیں گے اور جاری شدہ ویزوں کو بھی معطل کردیا جائے گا۔جس کے بعد یہ ڈور میٹ کا اشتہار ویب سائٹ سے غائب ہوگیا۔واضح رہے کہ ایمازون پہ کئی ایسے ڈورمیٹ موجود ہیں, بھارت نے اپنے جھنڈے کی تعظیم کو خاص اہمیت دی، اسی لیے بھارت میں اسے پیروں کے نیچے رکھنے کی سزا قید اور جرمانہ ہوسکتی ہے۔ اس سے قبل گذشتہ سال جون میں بھی ایمازون کو ایسی ہی مشکل صورتحال کا سامنا کرنا پڑا تھا جب ان کے ڈورمیٹس پر بھارتی بتوں کی تصاویر موجود ہونے کی نشاندہی کی گئی تھی۔