Cloud Front

فوجی عدالتوں کی توسیع: حکومت کا سیاسی و عسکری قیادت کا مشترکہ اجلاس بلا نے کا فیصلہ

دوسرے مرحلے میں پارلیمنٹ کا ’’ان کیمرہ‘‘ اجلاس بلایا جائیگا ، وفاقی وزیرداخلہ قومی ایکشن پلان پرپارلیمنٹ کو بریفنگ دیں گے،رپورٹ

اسلام آباد: حکومت نے فوجی عدالتوں میں توسیع کیلئے حکمت عملی طے کرلی ،سیاسی و عسکری قیادت کا مشترکہ اجلاس بلانے کا فیصلہ کرلیا گیا جبکہ دوسرے مرحلے میں پارلیمنٹ کا ’’ان کیمرہ‘‘ اجلاس بلایا جائیگا ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وفاقی حکومت نے فوجی عدالتوں میں توسیع کا معاملہ حل کرنے کیلئے 2نکات پرمشتمل حکمت عملی طے کرتے ہوئے پہلے مرحلے میں سیاسی وعسکری قیادت کامشترکہ اجلاس جبکہ دوسرے مرحلے میں پارلیمنٹ کا ان کیمرا اجلاس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔رپورٹس کے مطابق فوجی عدالتوں میں توسیع کے حوالے سے اجلاس میں وفاقی وزیرداخلہ قومی ایکشن پلان پرپارلیمنٹ کو بریفنگ دیں گے اور حکومت کی کوشش ہے کہ اس اجلاس میں آئینی ترمیم منظورکرلی جائے۔

اس اجلاس کے انعقاد کے حوالے سے وفاقی حکومت 31 جنوری کو پارلیمانی قیادت کی مشاورت سے شیڈول کو طے کرنے کی کوشش کرے گی۔علاوہ ازیں اجلاس میں حکومت پارلیمانی قیادت کو آگاہ کرے گی کہ فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے علاوہ عدالتی نظام میں اصلاحات کیلئے پارلیمانی کمیٹی کے قیام پر بھی تیارہے، آئینی وقانونی ماہرین کی رائے کی روشنی میں عدالتی نظام میں اصلاحات کیلئے پارلیمنٹ میں قانون سازی کے ذریعے ایک اور آئینی ترمیم کی جائے گی۔