Cloud Front
PSL logo

پی ایس ایل فائنل میں غیرملکی ستاروں کی کہکشاں سجنا دشوار دکھائی دینے لگا

ممکنہ کھلاڑیوں کے حوالے سے ابھی کچھ کہنا قبل ازوقت ہوگا،دبئی میں میٹنگز کی جائینگی، ایک اور پلیئرز ڈرافٹ بھی ہونا باقی ہے، نجم سیٹھی

لاہور: پی ایس ایل فائنل میں غیرملکی ستاروں کی کہکشاں سجنا دشوار دکھائی دینے لگا۔پاکستانی ٹوئنٹی20لیگ کی گورننگ کونسل کے سربراہ نجم سیٹھی کا کہنا ہے کہ ممکنہ کھلاڑیوں کے حوالے سے ابھی کچھ کہنا قبل ازوقت ہوگا،دبئی میں میٹنگز کی جائینگی، ایک اور پلیئرز ڈرافٹ بھی ہونا باقی ہے،صحیح وقت پر ساری معلومات دیں گے، فیکا اور سیکیورٹی ادارے کو بھی معاملات میں شامل کرنا چاہتے ہیں۔ ان کے مطابق آئی سی سی ٹاسک فورس کے سربراہ جائلز کلارک نے چند وجوہات کی بنا پرمصلحت پسندانہ اور محتاط بیان دیا۔سیکیورٹی رپورٹ مکمل ہونے تک حتمی بات نہیں کرسکتے لیکن وہ بریفنگ سے مطمئن تھے، تعاون کی یقین دہانی بھی کرائی،پی ایس ایل فائنل ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کیلیے اہم قدم ثابت ہوگا،پاکستان کو نیا ٹیلنٹ بھی میسر آئے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ پی ایس ایل کا فائنل9مارچ کو قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کرانے کیلیے بھرپور کوشش کررہا ہے تاہم اس ضمن میں چند مشکلات درپیش ہیں۔فیڈریشن آف انٹرنیشنل کرکٹرز ایسوسی ایشن نے سیکیورٹی ماہرین کی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے غیر ملکی کھلاڑیوں کو لاہور نہ جانے کا مشورہ دیا ہے، پی سی بی کا موقف ہے کہ حقائق کو جانے بغیر دور بیٹھ کر ایک منفی رائے قائم کرلی گئی، اس لیے فائنل کا میلہ ملک میں سجانے کے پروگرام میں کوئی تبدیلی نہیں کی جائیگی، فیکا کی جانب سے روڑے اٹکائے جانے کے ساتھ پی ایس ایل حکام کیلیے ایک مسئلہ یہ بھی ہے کہ کئی غیر ملکی کرکٹرز انٹرنیشنل مصروفیات، این او سی نہ ملنے، انجریز اور نجی مسائل کی وجہ سے معذرت کرچکے، اسکواڈز مکمل کرنے کیلیے فرنچائززکو دوسرے ڈرافٹ کا سہارا لینا پڑا، ابھی تیسرے کی بھی ضرورت پڑے گی۔

فائنل میں کون سی ٹیمیں پہنچیں گی اور ان میں کون سے اسٹار کرکٹرز شامل اور کتنے پاکستان آنے کیلیے تیار ہونگے،اس حوالے سے ابھی حتمی طور پر رائے نہیں دی جا سکتی،اگرچہ حکام کا دعویٰ رہا ہے کہ ٹاپ غیر ملکی کھلاڑیوں کے انکار کی صورت میں ’’بی‘‘ کیٹیگری کے پلیئرز کو موقع دیا جائے گا۔گزشتہ روز لاہور میں اسپانسرز کی جانب سے منعقدہ تقریب میں پی ایس ایل گورننگ کونسل کے سربراہ نجم سیٹھی کے بیان سے بھی یہی ظاہر ہوا کہ فائنل لاہور میں ضرور ہوگا لیکن اس میں اسٹار کرکٹرز کی شمولیت کے حوالے سے سوالیہ نشان برقرار ہے،ایک سوال پر انھوں نے کہا کہ ممکنہ کھلاڑیوں کے حوالے سے ابھی کچھ کہنا قبل ازوقت ہوگا، معاملات کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔