Cloud Front

حکومت کی اتحادی جماعتیں نالاں ، وفاقی کابینہ کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

بلوچستان میں مردم شماری فوری طور پر ملتوی کی جائے،میرحاصل بزنجو
فاٹا کو خیبرپختو نخوا میں ضم کر نے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے ، بل پر اچانک عملدرآمد روکنا گہری سازش لگتی ہے،اسفندیار ولی
وزیراعظم نوازشریف نے اتحادیوں کے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرا دی

اسلام آباد: وفاقی کابینہ کے اجلاس میں حکومت کی اتحادی جماعتیں وزیراعظم نوازشریف سے نالاں ہو کر تحفظات بیان کرتی رہیں، وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ میرحاصل بزنجو نے وزیراعظم سے فوری طور پر بلوچستان میں مردم شماری روکنے کا مطالبہ کردیا جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی وفاقی کابینہ کے ایجنڈے میں فاٹا اصلاحات نکالنے کے معاملے پر شدید برہم نظر آئے اور کہا کہ فاٹا اصلاحات کے بل پر عملدرآمد اچانک روکنا کسی گہری سازش کا حصہ ہے ۔منگل کے روز وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیراعظم نوازشریف کی زیر صدارت شروع ہوا تواس میں حکومت کی اتحادی جماعتیں نالاں دکھائی دیں ،

وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ میر حاصل بزنجو نے وزیراعظم نوازشریف سے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان میں مردم شماری فوری طور پر ملتوی کی جائے کیو نکہ اس وقت افغان مہاجرین کی بڑی تعداد بلوچستان میں موجود ہے ۔ وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ مردم شماری کسی بھی صورت میں ملتوی نہیں ہوسکتی لیکن آپ کے تحفظات کو دور کیا جائے گا جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی وفاقی کابینہ کے ایجنڈے سے فاٹا اصلاحات کا معاملہ نکالنے پر شدید برہم نظر آئے انہوں نے کہا کہ فاٹا کو خیبرپختو نخوا میں ضم کر نے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے ، بل پر عملدرآمد اچانک روکنا گہری سازش لگتی ہے ۔حکومت قبائلیوں کے آئینی حقوق کی فراہمی میں رکاوٹ نہ بنے تاہم وزیر اعظم نواز شریف نے اتحادیوں کے تحفظات تفصیل کے ساتھ سنے اور حل کرنے کی یقین دہانی بھی کرائی ۔