Cloud Front
Saqib Nisar

ادارے اپنا قبلہ درست کرلیں،کوتاہیاں برداشت نہیں کرینگے، چیف جسٹس

سپریم کور ٹ نے غیر معیاری سٹنٹ ازخود کیس میں ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کے بورڈ ممبران کی کوالیفکیشن کے کوائف طلب کر لئے

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے امراض قلب کے مریضوں کو غیر معیاری اور غیر رجسٹرڈ سٹنٹ لگانے سے متعلق از خود نوٹس کیس میں ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کے بورڈ ممبران کی کوالیفیکیشن کے کوائف طلب کر تے ہوئے کیس کی مزید سماعت مارچ کے پہلے ہفتہ تک ملتوی کردی ہے ، جبکہ دوران سماعت چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے ہیں کہ ادارے اپنا قبلہ درست کر لیں ، کوتاہیاں برداشت نہیں کرینگے،امریکن لا پروا نہیں کہ غیر معیاری اسٹنٹ کی منظوری دے دیں، مریض کو اسمگل شدہ اسٹنٹ ڈالنے کی اجازت نہیں دے سکتے ۔کیس کی سماعت شروع ہوئی تو ،سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ بورڈ اجلاس میں میں سٹنٹس کی رجسٹریشن سے متلعق درخواستوں کا جائزہ لیا جائے گا،اس پر جسٹس عمر عطابندیال نے استفسار کیا کہ درخواستیں اتنا عرصہ سے کیوں التوء کا شکار ہیں اس پرحکومتی وکیل رانا وقاراسٹنٹ رجسٹریشن کے حوالے سے گزشتہ روز بھی میٹنگ ہوئی اور منگل کو بھی میٹنگ ہونی ہے،جبکہ دوران سماعت اتھارٹی کی جانب سے چائنا میڈ اسٹنٹ رجسٹرڈ کرنے کا انکشاف ہوا جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے ہیں کہ اتھارٹی نے چائینا کے اسٹنٹ رجسٹرڈ کر لیئے ہیں،

امریکن،چاپانی، اور جرمن اسٹنٹ کی رجسٹریشن کی درخواستیں التوامیں ہیں،ادارے اپنا قبلہ درست کرلیں،آئندہ غیرذمہ داریاں اور کوتاہیاں برداشت نہیں ہونگی،امریکن لا پروا نہیں کہ غیر معیاری اسٹنٹ کی منظوری دے دیں، مریض کو اسمگل شدہ اسٹنٹ ڈالنے کی اجازت نہیں دے سکتے، آئندہ اس حوالے سے کوئی بات علم میں آئی تو برداشت نہیں کریں گے،ڈاکٹرز اپنے بریف کیس سے اسٹنٹ نکال کر مریض کو ڈال دیتے ہیں،مریض کو پتا ہونا چاہیے کہ اس کے اندر کونسا اسٹنٹ ڈالا گیا ہے،اسٹنٹ رجسٹریشن کی درخواستوں کو سردخانوں میں رکھ دیا گیا ، اتھارٹی کے بورڈ ممبران کوالیفائیڈ ہونے چاہیے ہیں،جبکہ چیف جسٹس نے ڈرگ اتھارٹی کے از سرنوتشکیل کا عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ ہوسکتا ہے کہ اتھارٹی کا بورڈ از سر نوتشکیل دینا پڑے،عدالت نے ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کو ہدایت کی ہے کہ تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ ملکر اسٹنٹ کے معاملے پر اجلاس بلایا جائے اور عدالت کو اس اجلاس سے متعلق آگاہ کیا جائے ۔عدالت نے اسٹنٹ از خود نوٹس کیس کی سماعت مارچ کے پہلے ہفتے تک ملتوی کر دی ۔