Cloud Front

ایوارڈ یافتہ کراٹے گرینڈ ماسٹراشرف طائی کا 34 سال بعد میچ فکسنگ کا اعتراف

مجھے اس بات پر کوئی شرمندگی نہیں ہے کیونکہ یہ ٹائٹل فائٹ یا ملک کیلئے فائٹ نہیں تھی، جیتا تو ایک لاکھ ڈالر ملتے ،5لاکھ ڈالرز لے کر ہار گیا ، اشرف طائی

لاہور : کراٹے کے گرینڈ ماسٹر اشرف طائی نے 34 سال بعد میچ فکسنگ کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ ’’میں نے5لاکھ ڈالرز لیکر میچ ہارا‘‘۔تفصیلات کے مطابق پرائڈ آف پرفارمنس حاصل کرنے والے کراٹے کے چیمپئن اشرف طائی بھی میچ فکسر نکلے اور انہوں نے اس بات کا اعتراف کرلیا ہے کہ جرمنی کے ہاورڈ جیکسن کے خلاف 1983 ء4 میں لڑی جانیوالی فائٹ5 لاکھ ڈالرز میں فکس تھی۔انہوں نے کہا کہ جرمن کھلاڑی سے جیتتا تو ایک لاکھ ڈالر زملتے مگر ہارنے پر 4 لاکھ ڈالرز کی پیشکش ہوئی تھی۔فائٹ سے پہلے انھیں کہا گیاکہ مقابلے میں ڈیفنس میں رہنا ہے زیادہ جوابی وار کرنے کی ضرورت نہیں۔۔

اشرف طائی نے اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ مجھے اس بات پر کوئی شرمندگی نہیں ہے کیونکہ یہ ٹائٹل فائٹ یا ملک کیلئے فائٹ نہیں تھی۔گرینڈ ماسٹر نے کہا کہ ہارنے کیلئے مار کھائی اور مجھے ہارنے پر 5 لاکھ ڈالرز دیئے گئے۔واضح رہے کہ ان مقابلوں میں اشرف طائی پاکستان کی نمائندگی کررہے تھے۔ اشرف طائی کو مارشل آرٹس میں خدمات کے اعتراف میں حکومت پاکستان کی جانب سے تمغہ حسن کارکردگی بھی دیا گیاہے