Cloud Front
ECP

الیکٹرانیک اور بائیو میٹرک ووٹنگ مشینوں کی خریداری کیلئے معاہدے کی تیاری شروع

ابتدائی طور پر 200بائیو میٹرک اور 150الیکٹرانیک ووٹنگ مشینوں کی خریداری کا فیصلہ

اسلام آباد: الیکشن کمیشن آف پاکستان نے الیکٹرانیک اور بائیو میٹرک ووٹنگ مشینوں کی خریداری کیلئے معاہدے کی تیاری شروع کر دی ہے ابتدائی طور پر 200بائیو میٹرک اور 150الیکٹرانیک ووٹنگ مشینوں کی خریداری کا فیصلہ کیا گیا ہے اور خریداری کے بعد آنے والے کسی بھی ضمنی انتخابات میں تجرباتی بنیادوں پر اس کا استعمال کیا جائے گا ۔الیکشن کمیشن کے ذرائع کے مطابق آئندہ انتخابات کو شفاف اور منصفانہ بنانے کیلئے الیکٹرانیک اور بائیو میٹرک ووٹنگ مشینوں کی خریداری کا عمل جلد ہی شروع کر دیا جائے اس سلسلے میں ٹینڈر کا عمل مکمل کیا جاچکا ہے الیکشن کمیشن مشینوں کی خریداری کیلئے ایک معاہدہ تیار کر رہی ہے جس میں متعلقہ فرم کی حیثیت مشینوں کی ساخت اور جس ملک سے خریدیں جائیں اس کسی تفصیلات شامل ہیں ذرائع کے مطابق یہ تمام تفصیلات ایک معاہدے کے زریعے الیکشن کمیشن سے لی جائیں گی

اور فرم کے بارے میں تسلی ہونے کے بعد الیکشن کمیشن الیکٹرانیک اور بائیو میٹرک ووٹنگ مشینوں کی خریداری کاعمل شروع کر دیا جائے گا ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن نے 200بائیو میٹرک اور 150الیکٹرانیک ووٹنگ مشینوں کی خریداری کی منظوری انتخابی اصلاحات کی کمیٹی سے حاصل کی ہے اور ان مشینوں کو خریداری کے فوراً بعد تجرباتی بنیادوں پر کسی بھی ضمنی انتخابات میں استعمال کیا جائے گاذرائع کے مطابق اس سے قبل خریدے جانے والے مشینوں کی تعداد بہت زیادہ تھی مگر اس پر ہونے والے اخراجات ٹرانسپوٹیشن اور مناسب سٹوریج کا سسٹم نہ ہونے کیوجہ سے اس کی تعداد میں کمی کر دی گئی

ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن کے حکام الیکٹرانیک اور بائیو میٹرک ووٹنگ مشینوں کی خریداری سے قبل اس کے بارے میں قانون سازی کرنے کی بھی سفارش کی تھی کیونکہ انہیں خدشہ تھا کہ اگر ان مشینوں کی خریداری پر بھاری سرمایہ خرچ کیا گیا اور ان کے استعمال کا تجربہ کامیاب نہ ہوا یا کسی بھی سیاسی جماعت کی جانب سے اس کے استعمال کو چیلنج کردیا گیا تو اس کی جواب دہی کی ذمہ داری الیکشن کمیشن پر عائد ہوگی اور الیکشن کمیشن کے افسران آڈیٹر جنرل یا نیب کے سامنے جواب دہ ہونگے ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن کے ووکلا الیکٹرانیک ووٹنگ اور بائیو میٹرک مشینوں کی خریداری کیلئے معاہدے کی تیاری میں مصروف ہیں جس کے بعد ان مشینوں کی خریداری کا عمل مکمل کرکے استعمال کیلئے عملے کو تربیت کا آغاز کر دیا جائے گا۔