Cloud Front
Trump

ٹرمپ کا امیگریشن پر نیا حکم نامہ جاری کرنے کا فیصلہ

ملک کو محفوظ بنانے کے لیے جو ضروری ہوگا کروں گا،امریکی صدر

واشنگٹن: امریکی صدر نے7 مسلم ملکوں پر پابندی کا حکم نامہ معطل ہونے کے بعد امیگریشن سے متعلق نیا ایگزیکٹو آرڈر جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ یہ نیا حکم نامہ ایک دو روز میں جاری کر دیا جائیگا،امریکی صدر ٹرمپ نے کہا کہ اپنے ملک کو محفوظ بنانے کے لیے جو ضروری ہوگا وہ کریں گے۔ ایک غیر ملکی خبر ایجنسی کا دعویٰ ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے سپریم کورٹ سے رجوع نہ کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔امریکی میڈیا کے مطابق ٹرمپ کے پہلے ایگزیکٹو آرڈر کو عدالت نے معطل کردیا تھا، جس میں انہوں نے سات مسلم ممالک کے افراد پر امریکا میں داخلے کی پابندی عائد کی تھی۔

اس پابندی کو پہلے سے اٹل کی ایک مقامی نے معطل کیا تھا۔ٹرمپ انظامیہ کی جانب سے اپیل کیے جانے پر سان فرانسسکو کی اپیلز کورٹ نے بھی سیاٹل عدالت کے فیصلے کو برقرار رکھا ہے، تاہم اب ٹرمپ انتظامیہ نے سان فرانسسکو کی عدالت کے فیصلے کے بعد سپریم کورٹ سے رجوع نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ٹرمپ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ امیگریشن سے متعلق نیا ایگزیکٹو آرڈر جاری کیا جائے گا جو ایک دو روز میں جاری کیا جا سکتا ہے ۔