Cloud Front
State Bank Of Pakistan

شرح منافع میں کمی، بچت سکیموں میں سرمایہ کاری28 ارب کم ہوگئی

گزشتہ مالی سال کی پہلی ششماہی 141ارب 48کروڑ 55لاکھ کی سرمایہ کاری کی گئی جبکہ رواں مالی سال کے دوران 113ارب 55کروڑ 98لاکھ کی سرمایہ کاری کی گئی ہے
کاروباری طبقے کے ساتھ عوام بھی 25ہزار اور 40ہزار روپے مالیت کے بانڈز کی شکل میں لین دین کررہے ہیں،ذرائع

کراچ: قومی بچت سکیموں پر شرح منافع میں کمی کی وجہ سے نیشنل سیونگز اسکیمز میں سرمایہ کاری کا عوامی رجحان بھی کم ہورہا ہے۔سٹیٹ بینک آف پاکستان کے اعدادوشمار کے مطابق رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران قومی بچت میں کی جانے والی سرمایہ کاری گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 27 ارب 92کروڑ 57لاکھ روپے کم رہی،گزشتہ مالی سال کی پہلی ششماہی (جولائی تا دسمبر 2015) کے دوران قومی بچت سکیموں میں مجموعی طورپر 141ارب 48کروڑ 55لاکھ روپے کی سرمایہ کاری کی گئی تھی جبکہ رواں مالی سال (جولائی تا دسمبر2016) کے دوران 113ارب 55کروڑ 98لاکھ روپے کی سرمایہ کاری کی گئی ہے۔رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران ڈیفنس سیونگ سرٹیفکیٹ میں سرمایہ کاری بڑھی، پرائز بانڈز اور متفرق سکیموں میں سرمایہ کاری کم مگر صورتحال نسبتاً بہتر رہی جبکہ ریگولر انکم سرٹیفکیٹ اور اسپیشل سیونگ سرٹیفکیٹ میں کی جانے والی سرمایہ کاری میں غیرمعمولی کمی واقع ہوئی ہے، ڈیفنس سیونگ سرٹیفکیٹ میں سرمایہ کاری 1ارب 6کروڑ 13لاکھ روپے کے مقابلے میں رواں مالی سال بڑھ کر 13ارب 37کروڑ 97لاکھ روپے رہی،

ریگولر انکم سرٹیفکیٹ میں گزشتہ مالی سال کے پہلے 6ماہ میں 5ارب 30کروڑ 76لاکھ روپے کے رقم نکلوائی گئی تھی جبکہ رواں مالی سال کے دوران ریگولر انکم سرٹیفکیٹ سے رقوم نکلوانے کے رجحان میں مزید اضافہ ہوا ہے اور 13ارب 75کروڑ 86لاکھ روپے کی رقوم نکلوائی گئی، اسی طرح اسپیشل سیونگز سرٹیفکیٹ پر منافع کی شرح میں کمی کی وجہ سے اس اسکیم سے بھی 7ارب 36کروڑ 73 لاکھ روپے کی رقم نکلوائی گئی ہے،گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کے دوران سپیشل سیونگز سرٹیفکیٹس میں 4ارب 83کروڑ 60لاکھ روپے کی سرمایہ کاری کی گئی تھی، رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں پرائز بانڈز میں کی جانے والی سرمایہ کاری کی مالیت 60 ارب 73کروڑ 66لاکھ روپے رہی، گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کے دوران پرائز بانڈز میں 64 ارب 31کروڑ 48لاکھ روپے کی سرمایہ کاری کی گئی تھی۔مارکیٹ ذرائع کے مطابق بینکوں سے نقد رقوم نکلوانے پر ودہولڈنگ ٹیکس کی کٹوتی کی وجہ سے بڑی مالیت کے پرائز بانڈز کا استعمال بڑھ رہا ہے اور کاروباری طبقے کے ساتھ عوام بھی 25ہزار اور 40ہزار روپے مالیت کے بانڈز کی شکل میں لین دین کررہے ہیں، اس رجحان کی وجہ سے پرائز بانڈز میں کی جانے والی سرمایہ کاری میں اضافہ ہورہا ہے۔دوسری طرف اعدادوشمار کے مطابق رواں مالی سال کے دوران نیشنل سیونگز کی دیگر متفرق اسکیموں میں 60ارب 56کروڑ 93 لاکھ روپے کی سرمایہ کار کی گئی ہے، گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے میں متفرق اسکیموں میں 76ارب 58 کروڑ 10 لاکھ روپے کی سرمایہ کاری کی گئی تھی۔واضح رہے کہ اسپیشل سیونگز اسکیم پر شرح منافع اگست 2015میں 7.40فیصد تھی جو فروری 2017میں کم ہوکر 6 فیصد کی سطح پر آگئی ہے۔