Cloud Front

امریکہ نے ’’النصرہ فرنٹ ‘‘ نامی تنظیم پر پابندی عائد کر کے بلیک لسٹ کر د یا

واشنگٹن: امریکی وزارت خزانہ نے شام میں سرگرم انتہا پسند تنظیم النصرہ فرنٹ پر پابندی عائد کرتے ہوئے اسے بلیک لسٹ کر دیا ہے۔ وزارت خزانہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکی حکام کے مطابق ایاد نظمی صالح خلیل اور بسام احمد الحصری فتح شام محاذ کی سرگرمیوں کی نگرانی کرتے رہے ہیں۔ واشنگٹن کی جانب سے فیصلہ آنے پر امریکی قانون کے بموجب دونوں افراد سے کوئی بھی امریکی کمپنی کاروبار نہیں کر سکے گی اور ان کے اثاثے بھی منجمد کر دیئے جائیں گے۔امریکی حکام کا دعوی ہے کہ گذشتہ برس تک صالح خلیل جفش کا تیسرا اہم عہدیدار سمجھا جاتا تھا جنہوں نے انتہا پسند گروپ کی سیکیورٹی اور انٹیلی جنس کارروائیوں کو بڑھوا دیا۔ نیز یہی عہدیدار یرغمالیوں کو تشدد کا نشانہ بنانے کے لئے مشہور جیلیں چلانے کا بھی ذمہ دار تھا۔

اگرچہ شام میں داعش کے مقابلے میں ‘جفش’ کے پاس کم افرادی قوت ہے اور یہ زیادہ علاقے پر کنٹرول بھی نہیں رکھتی تاہم اس کے باوجود امریکی عہدیدار ‘جفش’ کو عراق اور شام میں مسلسل ایک خطرا سمجھتے ہیں۔ جفش نے گذشتہ برس القاعدہ سے علاحدگی کے بعد اپنے نام میں تبدیلی کر لی تھی۔ادھر ایک دوسری پیش رفت میں امریکی وزارت خزانہ نے شام میں قائم ایک کمپنی کو بھی بلیک لسٹ کر دیا ہے جس کا شامی حکومت سے تعلق بتایا جاتا ہے اور اس نے بشار الاسد حکومت کو غیر روایتی اسلحہ تیاری میں مدد کی.