Cloud Front
Misbah

مصباح الحق اور یونس خان اب گریڈ ’ٹو‘ کرکٹ کھیلیں گے

پاکستان فرسٹ کلاس کرکٹ میں واپسی کے لیے ایسوسی ایشن اور محکموں کی ٹیمیں واپس آنے کی جدوجہد میں مصروف
دونوں کھلاڑیوں کی دورہ ویسٹ انڈیز سے قبل تیاری سے زیادہ توجہ اس بات پر مرکوز ہے کہ اپنی ٹیموں کو چیمپئن بنوا کر ایک بار پھر قائد اعظم ٹرافی گریڈ ’ون‘ میں جگہ دلوا دیں

لاہور : ایک ایسے وقت میں جب ہر جگہ پاکستان سپر لیگ سیزن ’ٹو‘ کی بات ہو رہی ہے، پاکستان فرسٹ کلاس کرکٹ میں واپسی کے لیے ایسوسی ایشن اور محکموں کی ٹیمیں واپس آنے کی جدوجہد میں مصروف ہیں۔خاص بات یہ ہے کہ 7مارچ سے شروع ہونے والے قائد اعظم ٹرافی گریڈ ’ٹو‘ سیزن کیلئے ٹیسٹ ٹیم کے دو بڑے نام کپتان مصباح الحق اور ریکارڈ ساز بیٹسمین یونس خان کھیلنے پر رضا مندی ظاہر کر چکے ہیں۔مصباح الحق فیصل آباد اور یونس خان ایبٹ آباد کی جانب سے گریڈ ’ٹو‘ کرکٹ کھیلتے نظر آئینگے، دونوں کھلاڑیوں کی دورہ ویسٹ انڈیز سے قبل تیاری سے زیادہ توجہ اس بات پر مرکوز ہے کہ اپنی ٹیموں کو چیمپئن بنوا کر ایک بار پھر قائد اعظم ٹرافی گریڈ ’ون‘ میں جگہ دلوا دیں۔بہتر ٹیسٹ میچوں میں10سنچریوں کے ساتھ4951رنز اسکور کرنے والے مصباح الحق کچھ عرصے پہلے اقبال اسٹیڈیم فیصل آبادمیں صحافیوں سے گفتگو میں اس بات کا تذکرہ کر چکے ہیں کہ جس فیصل آبادنے پاکستان کرکٹ کو ان سمیت سعید اجمل، محمد حفیظ اور کئی ٹیسٹ کرکٹرز دئیے،

آج یہ ٹیم فرسٹ کلاس ٹورنامنٹ کیلئے کوالیفائی راؤنڈ کھیل رہی ہے۔کچھ ایسا ہی معاملہ ایبٹ آباد کے ساتھ بھی نظر آتا ہے، جہاں سے ٹیسٹ کرکٹرز یاسر شاہ اور جنید خان کھیل کر پاکستان ٹیم تک پہنچے اور آج ایبٹ آباد ریجن گریڈ ’ٹو‘ ٹورنامنٹ کھیل رہا ہے، 9ٹیسٹ میچوں میں قومی ٹیم کی قیادت کر نے والے یونس خان ماضی میں بھی ایبٹ آباد کے لیے کھیلتے رہے ہیں اور اب ایک بار پھر وہ اس ریجن کے نوجوان کرکٹرز کے ساتھ کھیل کر یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ ایبٹ آبادکو مشکل وقت میں سپورٹ کرنے اور کوالی فائی کرانے کی پوری کوشش کریں گے، 34ٹیسٹ سنچریوں کے ساتھ ریکارڈ 9977رنز بنانے والے یونس خان کو 10ہزار ٹیسٹ رنز مکمل کرنے کیلئے صرف 22رنز درکار ہیں۔ دورہ ویسٹ انڈیز میں قومی ٹیم کو تین ٹیسٹ کھیلنا ہیں اور قوی امکان اس بات کا ہے کہ یونس خان اس سیریز کے دوران ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کی جانب سے 10ہزار رنز بنانے والے پہلے بیٹسمین بننے کا اعزاز حاصل کر لیں گے؟