Cloud Front
foreign office

دشمن افغانستان کی سرزمین کو پاکستان کے خلاف استعمال کر رہے ہیں، دفتر خارجہ

دونوں ممالک کو مل کر سرحدی علاقوں کو دہشتگردوں سے پاک کرنا ہوگا،طورخم مناسب وقت پر کھولا جائیگا، بھارت اپنی آپ کو مظلوم دکھانے کی کوشش کر رہا ہے ،نفیس زکریا کی ہفتہ وار پریس بریفنگ

اسلام آباد: پاکستان نے کہا ہے کہ دشمن افغانستان کی سرزمین کو پاکستان کے خلاف استعمال کر رہے ہیں، جبکہ دہشتگردی پاکستان اور افغانستان دونوں ممالک کی مشترکہ دشمن ہے، دونوں ممالک کو مل کر دہشتگردی سے نمٹنے کی کوشش کرنے ہوگی اور سرحدی علاقوں کو دہشتگردوں سے پاک کرنا پڑے گا، اس بات کا اظہار ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے جمعرات کو میڈیا کو ہفتہ روزہ بریفنگ دیتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ امن کے دشمن افغانستان میں صورتحال خراب ہونے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے پاکستان میں امن و امان کے حالات کو خراب کر کہ دہشتگردی کی وارداتیں کر رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے دہشتگردی کے خلاف جنگ کو پورے عزم کے ساتھ لڑنے کا اعلان کر رکھا ہے، انہوں نے کہا کہ افغانستان کے پاکستان میں سفیر نے مشیر خارجہ سرتاج عزیز کے ساتھ ملاقات میں دہشتگردی کے خلاف مل کر کہ کام کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے،

ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں امن لانے کی تمام کوششوں کی بھرپور حمایت کرتا ہے اور پاکستان ایسی تمام کوششوں جن میں کیو سی جی اور دوسرے اقدامات کی حمایت کرتا ہے، افغان مہاجرین کی مدد جاری رکھے گا، پاک افغان سرحد کو دوبارہ کھولنے کے حوالے سے ترجمان نے کہا کہ اسے مناسب وقت پر کھولا جائے گا، انہوں نے کہا کہ پاکستان نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں قیمتی جانیں قربانی کی ہیں، حالیہ دہشتگردی میں بھارت کے ملوث ہونے کے حوالے سے ترجمان نے کہا کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے اس حوالے سے تحقیقات کر رہے ہیں، اس کے باوجود بھی کہ بھارت پاکستان میں دہشتگردی کے کارروائیوں میں ملوث ہے، حافظ سعید کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ بھارت اپنی آپ کو مظلوم دکھانے کی کوشش کر رہا ہے کہ بھارتی حاضر سروس کلبھوش یادیو نے خود اعتراف کیا ہے کہ بھارت پاکستان میں دہشتگردی کی کارروائیوں میں ملوث ہے، انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ پاکستان میں پہلے مارچ سے شروع ہونے والی ای سی او سربراہی کانفرنس میں تقریبن تمام ارکان ممالک کی جانب سے اعلیٰ ترین سطح پر شرکت کی تصدیق کی گئی ہے