Cloud Front
foreign office

افغان نائب سفیر کی دفترخارجہ طلبی، پاکستان کا شدید احتجاج، مراسلہ تھما دیا

سرحد پار سے حملے برداشت نہیں،افغانستان دہشت گردوں کیخلاف موثر کارروائی کرے،دفتر خارجہ

اسلام آباد : افغانستان سے دہشتگردوں کا پاکستانی چوکیوں پر حملے کے نتیجے میں پاکستان کا افغانستان سے شدید احتجاج کیا افغانی سفیر عبدالناصر یوسیفی کو احتجاجی مراسلہ تھما دیا گیا ۔ تفصیلات کے مطابق پیر کے روز پاکستان میں تعینات افغانستان کے نائب سفیر عبدالناصر کو دفتر خارجہ طلب کر کے دہشتگردوں کی طرف سے افغان سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال ہونے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا گیا کہ سرحدپار سے حملے کسی صورت برداشت نہیں افغانستان دہشت گردوں کیخلاف فوری اور موثر کارروائی کرے ،دفتر خارجہ نے کہا کہ پاک افغان بارڈر اسی لئے بند ہے کیونکہ دہشتگرد افغانستان سے پاکستان میں داخل ہو کر پاکستان میں دہشتگردی پھیلاتے ہیں ۔

دفتر خارجہ نے احتجاجی مراسلہ تھماتے ہوئے افغان سفیر سے مطالبہ کیا ہے کہ 76 دہشتگردوں کے حوالے سے دی گئی حالیہ فہرست پر افغان حکومت کی جانب سے کارروائی عمل میں کیوں نہیں لائی گئی جبکہ افغان حکومت کو چاہئے تھا کہ وہ پڑوسی ملک کے تحفظات کو دور کرتے ہوئے دہشتگردوں کے خلاف کارروائی عمل میں لاتی ۔احتجاجی مراسلے میں کہا گیا کہ افغانستان کی سرزمین پاکستان میں دہشتگردوں کے حملے کیلئے استعمال ہورہی ہے۔افغانستان واقعے کی تحقیقات کرکے پاکستان کو آگاہ کرے ۔واضح رہے کہ گزشتہ رات گزشتہ رات مہمند ایجنسی میں دہشت گردوں نے سرحد پار کرتے ہوئے پاک فوج کی تین چیک پوسٹوں پر حملہ کیا تھا حملے کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں پانچ جوان شہید اور دس دہشت گرد ہلاک ہو گئے تھے۔