Cloud Front
Pemra

چیئرمین پیمرا ابصار عالم کی تعیناتی اور مراعات کے خلاف درخوست

لاہور ہائی کورٹ نے وفاقی حکومت کو جواب داخل کرانے کا آخری موقع دے دیا

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے چیئرمین پیمرا ابصار عالم کی تعیناتی اور مراعات کے خلاف درخوست پر وفاقی حکومت کو جواب داخل کرانے کا آخری موقع دے دیا ہے. لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس جواد حسن نے اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی جس میں چیئرمین پیمرا ابصار عالم کی تعیناتی اور ملنے والی مراعات کو چیلنج کیا گیا۔ لاہور ہائیکورٹ نے عدالتی احکامات کے باوجود وفاقی حکومت کی جانب سے جواب داخل نہ کرانے کا نوٹس لیا اور ریمارکس دیئے کہ اگر وفاقی حکومت جواب نہیں داخل کرائے گی تو درخواست پر پیش رفت کیسے ہوگی.

درخواست گزار وکیل نے اعتراض کیا کہ عدالتی احکامات کے باجود ریکارڈ پیش نہ کرنا توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے۔درخواست گزار نے نشاندہی کی کہ 22اکتوبر 2015کو چیئرمین پیمرا کی تعیناتی کے خلاف درخواست پر جواب مانگا تھا لیکن 15ماہ گزارنے کے باجود جواب داخل نہیں کرایا جارہا۔درخواست گزار وکیل نے الزام لگایا کہ چیئرمین پیمرا کی تعیناتی سیاسی بنیادو ں پر کی گئی ہے اور چیئرمین پیمرا کو مقرر کردہ تنخواہ کے علاوہ دیگر مراعات دی جارہی ہیں. لاہور ہائیکورٹ نے وفاقی حکومت کو جواب داخل کرانے کا آخری موقع دے دیا اور درخواست پر مزید کارروائی 5اپریل تک ملتوی کر دی.