Cloud Front

لاہور:فائرنگ سے پی پی کے سابق ٹکٹ ہولڈر بابرسہیل بٹ جاں بحق

واردات پرانی دشمنی کا نتیجہ قرار ،قتل میں سہیل بٹ کے گن مین کے ملوث ہونے کا شبہ
قتل میں ملوث ملزمان کیخلاف مقدمہ چلایاجائے،آصفہ بھٹو
بلاول ہاوس لاہور میں تمام تنظیمی سرگرمیاں معطل

لاہور: لاہور کے علاقے مناواں لکھو ڈیر میں پیپلزپارٹی کے سابقہ ٹکٹ ہولڈر بابر سہیل بٹ کو قتل کر دیا گیا۔پولیس نے واردات کو پرانی دشمنی کا نتیجہ قرار دیا ہے ،واردات میں سہیل بٹ کے گن مین کے ملوث ہونے کا شبہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔پولیس کے مطابق پیپلزپارٹی کے رہنما ، سابقہ صوبائی ٹکٹ ہولڈر بابر سہیل بٹ لکھوڈیر میں اپنیگھر پر موجود تھے۔اسی دوران نامعلوم موٹرسائیکل سوار آئے اور اندھا دھند فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں بابربٹ شدید زخمی ہو گئے۔انہیں سروسز اسپتال لیجایا گیامگر زخموں کی تاب نہ لا سکے اور دم توڑ گئے ، واردات کے بعد ملزمان فرار ہو گئے۔بابر بٹ کے قتل میں ان کے گن مین عاطف جٹ کے ملوث ہونے کا شبہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔پولیس ذرائع کے مطابق مقتول کے گن مین عاطف عرف عاطی جٹ نے بابر بٹ کی مخبری کی ، اور ملزمان کے آنے پر گھر کا دروازہ کھولا۔بابر بٹ لاہور کے مشہور نورا کشمیری قتل کیس میں جیل بھی کاٹ چکے۔

تاہم بعد میں بری ہو گئے تھے ،ان پر پہلے بھی تین چار قاتلانہ حملے ہو چکے ہیں۔بابر بٹ کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے ڈیڈہاوس بھجوا دیا گیا ، ادھر پیپلزپارٹی کے سابقہ ٹکٹ ہولڈر بابر سہیل بٹ کے قتل پر بے نظیر بھٹو کی صا حبزادی آصفہ بھٹو نے اپنے ردعمل میں کہا کہ امیدہے بابربٹ کے قتل کی تحقیقات کرائی جائے گی۔آصفہ بھٹو نے کہا کہ بابربٹ کے قتل میں ملوث ملزمان کیخلاف مقدمہ چلایاجائے۔ علا وہ ازیں بابربٹ قتل کے بعد بلاول ہاوس لاہور میں تمام تنظیمی سرگرمیاں معطل کر دی گئیں۔سیکریٹری اطلاعات پی پی پنجاب مصطفیٰ نوازکھوکھر کہتے ہیں بلاول ہاوس میں لاہوراورقصورکے ضلعی تنظیمی امورسے متعلق اجلاس ہوناتھے۔جس میں چیئرمین بلاول بھٹونے تنظیمی عہدوں کے لیے امیدواروں کے انٹرویولیناتھے۔تاہم اب تمام سرگرمیاں معطل کر دی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ شوکت بسراپرقاتلانہ حملہ اوربابربٹ کاقتل حکومت کی ناکامی ہے۔چودھری منظور نے الزام لگایا کہ بابر بٹ پر پیپلزپارٹی کو چھوڑنے کیلیے دباو ڈالا جا رہا تھا۔