Cloud Front
Khawaja-Asif

راحیل شریف سعودی عرب کی قیادت میں 34ملکی اتحادکی سربراہی کریں گے ،خواجہ آصف

پاکستان یمن تنازعے کاحصہ نہیں بنے گا ، راحیل شریف کی سعودی عرب میں تقرری دہشتگردی کے خاتمے سے متعلق ہے
سعودی عرب میں ہماری فوج کسی ملک کے خلاف استعمال نہیں ہوگی،نجی ٹی وی سے گفتگو

اسلام آباد: وزیردفاع خواجہ آصف نے کہاہے کہ سابق آرمی چیف جنرل (ر) راحیل شریف سعودی عرب کی قیادت میں بننے والے 34ملکی اتحادکی سربراہی کریں گے ،تاہم پاکستان یمن تنازعے کاحصہ نہیں بنے گا۔ جنرل راحیل شریف کی سعودی عرب میں تقرری دہشتگردی کے خاتمے سے متعلق ہے ،

سعودی عرب میں ہماری فوج کسی ملک کے خلاف استعمال نہیں ہوگی ۔بدھ کے روزنجی ٹی وی سے گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ابھی تک سعودی عرب فوج بھیجنے کاحتمی فیصلہ نہیں کیا،تاہم راحیل شریف سعودی عرب میں بننے والے 34ملکی فوجی اتحادکی سربراہی کریں گے۔راحیل شریف کی سعودی عرب میں تقرری دہشتگردی کے خاتمے کیلئے ،دہشتگردی سب کامسئلہ ہے ،پاکستان یمن تنازعے کاحصہ نہیں بنے گا۔سعودیہ میں پاکستان کی فوج کسی ملک کے خلاف استعمال نہیں ہوگی ۔انہوں نے کہاکہ اگرحرمین شریفین کوخطرہ لاحق ہواتوسعودی عرب کی سلامتی پاکستان کی ذمہ داری ہے ۔حرمین شریفین کوخطرے کی صورت میں پاکستان حرمین شریفین اورسعودی عرب کی حفاظت کریگا